You are here
Home > پا کستا ن > اگلا وزیر اعظم عمران خان ہی ہو گا کیونکہ۔۔۔ بین الاقوامی ادارے نے انتخابی نتائج کے حوالے سے ناقابل یقین پیش گوئی کر دی

اگلا وزیر اعظم عمران خان ہی ہو گا کیونکہ۔۔۔ بین الاقوامی ادارے نے انتخابی نتائج کے حوالے سے ناقابل یقین پیش گوئی کر دی

اسلام آباد (ویب ڈیسک) بین الاقوامی ادارے عالمی انویسٹمنٹ بینک کریڈٹ سوئس نے پاکستان کے عام انتخابات میں تحریک انصاف کی فتح کی پیشن گوئی کردی، آئندہ الیکشن میں کوئی بھی پارٹی واضح اکثریت حاصل نہیں کرسکے گی، تاہم تحریک انصاف کو مسلم لیگ ن پر برتری حاصل ہوگی،

یہ بھی پڑھیں :’’بس 14 دن انتظار! عمران خان کے راستہ کا ایک کانٹا نکل گیا، نواز شریف واپس پہنچتے ہی جیل کے اندر، آصف زرداری کو بھی طلب کر لیا گیا یوں لگتا ہے کہ نیا پاکستان ۔۔۔۔۔۔۔ ‘‘ جاوید چوہدری نے 70 سالوں سے انقلاب کی منتظر عوام کو دنگ کر دینے والےحقائق سے آگاہ کر دیا

تجزیاتی رپورٹ۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان میں عام انتخابات کے انعقاد میں محض چند روز باقی ہیں۔ایسے میں جہاں تمام سیاسی جماعتوں کی جانب سے بھرپور تیاریاں کی جا رہی ہیں، وہیں دوسری جانب سیاسی جماعتوں کی عوامی مقبولیت کے حوالے سے مختلف اداروں کی جانب سے کیے جانے والے سرویز کے نتائج بھی جاری کیے جا رہے ہیں۔ اب ایک بین الاقوامی ادارے عالمی انویسٹمنٹ بینک کریڈٹ سوئس نے بھی پاکستان کے عام انتخابات 2018 کے حوالے سے تجزیاتی رپورٹ جاری کی ہے۔بین الاقوامی ادارے عالمی انویسٹمنٹ بینک کریڈٹ سوئس نے پاکستان کے عام انتخابات میں تحریک انصاف کی فتح کی پیشن گوئی کردی ہے۔ بین الاقوامی ادارے عالمی انویسٹمنٹ بینک کریڈٹ سوئس کی جانب سے جاری کردہ تجزیاتی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ آئندہ الیکشن میں کوئی بھی پارٹی واضح اکثریت حاصل نہیں کرسکے گی، تاہم تحریک انصاف کو مسلم لیگ ن پر برتری حاصل ہوگی۔ کریڈٹ سوئس کا کہنا ہے کہ نواز شریف کی پارٹی صدارت ختم ہونے سے پی ٹی آئی کو موقع ملا،

یہ بھی پڑھیں :نواز شریف اور مریم نواز کی وطن واپسی اور گرفتاری ۔۔۔۔ مگر کئی سال قبل لاہور میں ایک معروف عالم دین کے ساتھ بھی ایسے ہی حالات پیش آئے تھے ، اس پر انہوں نے کیا طرز عمل اختیار کیا تھا ؟ نامور کالم نگار نے یادگار واقعہ بیان کر دیا

اس لئے اس بات کے امکانات بہت زیادہ ہیں کہ پی ٹی آئی کو پاکستان مسلم لیگ ن پر برتری مل جائے۔۔پاکستان تحریک انصاف 34 فیصد یا 92 قومی اسمبلی کی نشستوں کے ساتھ اول نمبر پر جبکہ مسلم لیگ ن قومی اسمبلی کی 27 فیصد یا 73 سیٹوں کے دوسرے نمبر پر آسکتی ہے۔ پی ٹی آئی کامیابی کی صورت میں اتحادی حکومت بنا سکتی ہے مگر اس بات کے امکانات 60 فیصد ہیں۔رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ 15 فیصد امکانات ہیں کہ عمران خان حکومت بنانے کے لئے پیپلز پارٹی سے مدد مانگیں۔ کریڈٹ سوئس نے اپنی رپورٹ میں لکھا ہے کہ آئندہ حکومت کو آئی ایم ایف کے پاس جانا پڑ سکتا ہے کیونکہ زرمبادلہ کے ذخائر 2 ماہ کی درآمدات کے لئے ناکافی ہیں اور جاری کھاتوں کا خسارہ گیارہ ماہ میں 16 ارب ڈالر تک پہنچ چکا ہے۔(س)

یہ بھی پڑھیں :الیکشن 2018 : پنجاب کے اکثر حلقوں میں تو تحریک انصاف کا مقابلہ (ن) لیگ سے ہے مگر چند حلقے ایسے بھی ہیں جہاں پی ٹی آئی کو آزاد امیدوار اور پیپلز پارٹی ٹف ٹائم دینے والے ہیں ۔۔۔مزید تفصیلات اس خبر میں ملاحظہ کیجیے


Top