You are here
Home > پا کستا ن > فواد چودھری مستعفی ۔۔۔ وزیراعظم ہاﺅس سے رات گئے بڑی خبر بریکنگ نیوز آگئی

فواد چودھری مستعفی ۔۔۔ وزیراعظم ہاﺅس سے رات گئے بڑی خبر بریکنگ نیوز آگئی

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) تجزیہ کار مظہر عباس نے کہاہے کہ وزیراعظم ہاﺅس کے ذرائع اس بات کی تصدیق کررہے ہیں کہ فواد چودھری مستعفی ہورہے ہیں۔ نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے مظہر عباس نے کہا کہ وزیر اعظم ہاﺅس کے ذرائع اس بات کی تصدیق کررہے ہیں

کہ فواد چودھری مستعفی ہورہے ہیں، فواد چودھری وزیر اعظم کی میڈیا ٹیم میں اقلیت میں چلے گئے ہیں اور ان کے ٹوئٹس نے ان کی مخالفت کو بڑھا دیاہے ، اب عمران خان اگر فواد چودھری کے حق میں فیصلہ دے بھی دیتے ہیں تو فواد چودھری کے لئے مشکلا ت ہونگی ۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان کی میڈیا ٹیم میں فواد چودھری کی مخالفت میں اضافہ ہوگیاہے جس کی وجہ سے وہ اب آسانی سے پرفارم نہیں کرسکیں گے ۔ جبکہ دوسری جانب تجزیہ کار حفیظ اللہ نیازی نے کہاہے کہ عمران خان کے دل سے جو اتر جاتاہے ، وہ اتر جاتاہے ، فواد چودھری اب عمران خان کے دل سے اتر چکے ہیں، نعیم الحق اور فواد چودھری کا جھگڑا نہیں ہے ، اس کیس میں عمران خان کی مرضی شامل ہے۔ جیونیوز کے پروگرام ”رپورٹ کارڈ“ میں گفتگو کرتے ہوئے حفیظ اللہ نیازی نے کہا کہ ہائیکورٹ ہویا سپریم کورٹ ہو وہاں متضاد فیصلوں کی بہت سے مثالیں مل جائیں گے ، نواز شریف کے خلاف جب فیصلہ آیا تو وہ لندن سے بھی آگئے تھے حالانکہ پتہ تھا کہ جیل جانا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اگر ڈیل کی اور ڈھیل کی بات ہوتی تو وہ لندن میں ہی رہ سکتے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف کو جیل میں رہتے ہوئے ایک کروڑ تیس لاکھ ووٹ ملے ہیں ، وہ اپنے بیانیے پر راسخ العقیدہ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان ٹاس کریں گے اور سکے کے دونوں جانب نعیم الحق ہونگے ، نعیم الحق کے عمران خان کے ساتھ ذاتی تعلقات ہیں ، اہم بات یہ ہے کہ نعیم الحق اور فواد چودھری کا جھگڑا نہیں ہے ، اس کیس میں عمران خان کی مرضی شامل ہے ، یہ ایک طریقہ کار ہوتاہے ، بڑے لیڈروں کا ، عمران خان نے فواد چودھری کو پیغام بھجوایا ہے کہ آپ استعفیٰ دیدیں لیکن تحریک انصاف میں کچھ لوگوں نے فواد چودھری سے کہاہے کہ وہ مستعفی نہ ہوں بلکہ عمران خان کو ان کوڈسمس کرنے دیں ۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان کے دل سے جو اتر جاتاہے ، وہ اتر جاتاہے ، فواد چودھری اب عمران خان کے دل سے اتر چکے ہیں۔


Top