پارلیمنٹ سے ایک ساتھ کئی بل پاس،نواز شریف برہم،سخت ردعمل دیدیا

" >

لندن (ویب ڈیسک )پاکستان مسلم لیگ (ن) قائد وسابق وزیراعظم میاں محمد نوازشریف نے کہا ہے کہ جنہوں نے 2018کا الیکشن چرایا،گزشتہ روز الیکٹرانک ووٹنگ مشین،اسٹیٹ بینک سمیت 33بلز بلڈوز کئے،کیا یہ قوم کو بتانا پسند کریں گے کہ ان کا پوشیدہ ایجنڈا کیا ہے؟ کیوں انہوں نے ملک کو مزید پستی کی جانب دھکیلا؟ جمعرات کو سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر پر سابق وزیراعظم میاں محمد نوازشریف نے لکھا کہ گزشتہ روز الیکٹرانک ووٹنگ مشین،اسٹیٹ بینک سمیت 33بلز بلڈوز کرنے والے کیا یہ قوم کو بتانا پسند کریں گے کہ ان کا پوشیدہ ایجنڈا کیا ہے؟

دوسری طرف متحدہ اپوزیشن نے مشترکہ اجلاس میں منظور قوانین کو ماننے سے انکار کردیا،متحدہ اپوزیشن کے رہنماؤں احسن اقبال ، شیری رحمان ودیگر نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ نادرا قومی ادارہ ہے، حکومت ووٹرز لسٹوں کااختیار نادرا کو دے کر دھاندلی کرنا چاہتی ہے،چیئرمین نادرا حکومتی انتخابی مہم کیلئے وسائل استعمال کررہے ہیں۔

اطلاعات مل رہی ہیں کہ چیئرمین نادرا اگلے الیکشن کیلئے نادرا کا ڈیٹا استعمال کررہے ہیں، اگر انہوں نے کسی کو بھی ڈیٹا دیا تو غداری کے مرتکب ہوں گے۔ اگلے انتخابات میں دھاندلی کی بنیاد 17نومبر2021 سے رکھ دی ہے، بل اس لیے منظور کیا گیا کہ ساری چیزیں حکومت کے ہاتھ میں آ جائے۔ہم تو ٹیکنالوجی میں فقیر ہیں ، جرمنی بادشا ہے، جرمنی ٹیکنالوجی میں ہم سے ہزار گنا آگے ہے، جرمنی میں الیکٹرانک ووٹنگ کو غیر آئینی قرار دیا گیا، ای وی ایم کے ذریعے ووٹنگ کو ٹیمپر کیا جاسکتا ہے، سافٹ ویئر پر اثرانداز ہوسکتا ہے۔

?>

اپنا تبصرہ بھیجیں