پاکستان کے لیےبری خبر! آئی ایم ایف نے تمام اچھی تجاویز مسترد کر دیں

" >

اسلام آباد(ویب ڈیسک) آئی ایم ایف نے پاکستان کی خوہشات کا مزید احترام نہ کرنے کی ٹھان لیں،اور پاکستان کی اسٹیٹ بینک آف پاکستان سے قرض لینے کی راہ کھلی رکھنے کی تمام درخواستیں مسترد کر دیں،اس سے قبل آئی ایم ایف نے اسٹیٹ بینک کو مکمل خود مختار کرنے اور مرکزی بینک میں حکومتی اجارہ داری ختم کرنے کیشرط رکھی تھی۔جس سے اتفاق کرنے کے بعد ہی پاکستان کو قرض کی اگلی قسط جاری کی گئی ہے

تفصیلات کے مطابق مرکزی بینک کا 100فیصد منافع بھی اس وقت تک وفاقی حکومت کو منتقل نہیں ہوسکے گا جب تک کہ بینک اپنے مالیاتی واجبات کے لیے کوئی کور حاصل نہیں کرلیتا۔ اسٹیٹ بینک کے نفع کا 20 فیصد بینک کے پاس ہی رہے گا جب تک کہ وہ مطلوبہ کور حاصل نہیں کرلیتا۔

اس کے علاوہ نجی معتبر اخبار نے اپنے ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ آئی ایم ایف نے اسٹیٹ بینک آف پاکستان ایکٹ 1956 میں ترامیم کی حکومت پاکستان کی تمام اہم تجاویز مسترد کردی ہیں اور صرف مرکزی بینک کے بورڈ ممبرز کی تقرری اور سیکریٹری خزانہ کو بورڈ میں رکھنے کا وفاقی حکومت کا اختیار تسلیم کیا ہے مگر سیکریٹری کو ووٹ کا اختیار نہیں ہوگا۔

?>

اپنا تبصرہ بھیجیں