تین ماہ میں نجی شعبے نے کھربوں روپے کا قرضہ لے لیا،اعداد و شمار ایسے کہ آپ بھی چکرا جائیں

" >

کراچی (ویب ڈیسک) رواں مالی سال کے پہلے ساڑھے چار ماہ (19 جولائی سے نومبر) کے دوران نجی کاروباری اداروں کی جانب سے بینکوں سے لیے گئے قرضے چار سو بارہ ارب چالیس کروڑ روپے تک پہنچ گئے جو معاشی سرگرمیوں میں بہتری کی عکاسی کرتا ہے۔ لیکن ساتھ ہی ملکی بڑھتے تجارتی خسارے کا بھی باعث ہے

نجی میڈیا ہاوس ڈان کی رپورٹ کے مطابق اسٹیٹ بینک آف پاکستان (ایس بی پی) کے ڈیٹا کے مطابق گزشتہ مالی سال کے دوران اسی عرصے میں نجی شعبے نے تینتالیس ارب بیس کروڑ روپے کے قرضے حاصل کیے تھے

رواں مالی سال کے لیے اپنی پہلی سہ ماہی رپورٹ میں ایس بی پی نے رپورٹ کیا کہ نجی کاروباروں کو دیا جانے والا قرضہ جولائی تا ستمبر کے دوران تین سو اٹھارہ فیصد تک بڑھ کر ایک سو نوے ارب روپے تک پہنچ گیا ہے جو گزشتہ سال کل ستاسی ارب تھا

سب سے بڑی تبدیلی روایتی بینکوں کی جانب سے جارحانہ قرضہ فراہم کرنا تھا، نجی شعبے کو کمرشل بینکوں کے قرضے ساڑھے چار ماہ کے دوران اڑھائی ارب اسی کروڑ روپے تک پہنچ گئے جب کہ ایک سال قبل یہ چوہتر ارب ستر کروڑ روپے تھے۔

اسلامی بینکوں نے ایک سال پہلے کے تین ماہ میں ساٹھ کروڑ روپے کے مقابلے نجی شعبے کو تیرسٹھ ارب ستر کروڑ روپے کے قرضے دیے جبکہ روایتی بینکوں کی اسلامی بینکاری شاخوں نے ایک سال پہلے کی مدت کے ستر ارب اسی کروڑ روپے کے مقابلے میں ستانوے ارب اسی کروڑ روپے قرضے دیے۔

?>

اپنا تبصرہ بھیجیں